موصل میں آباد کاری اور شہری سہولیات کی بحالی کے کام

داعش کے سابقہ گڑھ موصل میں سب سے زیادہ نقصان شہریوں کو پانی کی فراہمی کے نظام کی تباہی کی صورت میں اٹھانا پڑا۔ دہشت گردوں نے جب اپنی شکست کو سامنے آتا دیکھا تو انہوں نے اس کا بدلہ شہریوں کو سہولیات فراہمی کے ڈھانچے کو تباہ کر کے لیا۔ لیکن مقامی اور عالمی برادی نے مل جل کر بحالی کے کام کو تیزی سے مکمل کرنے کا عمل شروع کر دیا ہے۔ بحالی کے منصوبوں میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی بھی شامل ہے جسے اڑھائی ماہ کی قلیل مدت میں مکمل کر لیا گیا۔