داعش سے آزادی کے بعد اقلیتی برادریوں نے اپنے گھروں اورعبادت گاہوں کو آباد کرنا شروع کردیا

عراق کے جن مقامات پر داعش کا قلع قمع کیا گیا وہاں غیر مسلم مذہبی اقلیتوں نے واپسی شروع کر دی ہے۔ مساوات اور برابری کی فضا کے نتیجے میں عبادت گاہیں کھلنے لگی اور محفوظ مستقبل کی امیدیں جاگنا شروع ہو گئیں ہیں۔ لیکن اس سے پہلے داعش نے غیر مسلم اقلیتی مذہبی گروہوں کا جینا حرام کردیا۔ ہزاروں خاندان بے گھر کر دیئے اور انکی عبادت گاہوں کو آگ لگا دی گئی تھی۔